Posted in GHAZAL

جادو جگا رہی ہے پون لوگ سو گئے

Posted in GHAZAL

ہونٹوں پہ کبھی اُن کے میرا نام ہی آئے

Posted in GHAZAL

ہم تیرے شہر میں آئے ہیں مسافر کی طرح

Posted in GHAZAL

چارہ گر تیرے امتحان کے لئے

Posted in GHAZAL

ہے عمر رفتہ کی کیا تلافی

Posted in GHAZAL

کوئی نہ تھا اپنے مقابل

Posted in GHAZAL

دُکھتی رگ کو چھیڑ کے لوگوں کو جانے کیا ملتا ہے

Posted in GHAZAL

ابھی ملا ہی کہاں ہے وہ آئینہ مجھ کو

Posted in GHAZAL

سوچتا ہوں آگہی کے اس سفر نے کیا دیا

Posted in GHAZAL

یہ کب کہا تھا نظاروں سے خوف آتا ہے

Posted in GHAZAL

کوباکوپھیل گئی بات شناسائی کی

Posted in GHAZAL

سفر ملال کا ہے اور چل رہی ہوں میں

Posted in GHAZAL

نہ اس کی بات سنتا ہوں نہ کچھ اس کو بتاتا ہوں

Posted in GHAZAL

حاکم وقت

Posted in GHAZAL

اور تھا کس میں بھلا یہ حوصلہ میرے سوا